قلندر پاک رحمتہ اللہ علیہ



اس سے پہلے کہ قلندر پاک ؒ کی شخصی اور روحانی زندگی کے مختلف پہلووں پر روشنی ڈالی جائے ، میں یہ بات ضروری سمجھتا ہوں کہ آپکی پیدائش، وصال، عُرس اور وراثت کے حوالے سے موجود چند بے بنیاد الجھنوں اور غلط فہمیوں کو دور کر دوں، تاکہ وہ تمام لوگ جو آپکے فیض سے مستفید ہوتے ہیں اور آپ ؒ کے بارے میں جاننا چاہتے ہیں وہ کسی بھی الجھن کا شکار ہوئے بغیر حقیقت سے روشناس ہو سکیں اورقلندر پاک رحمتہ اللہ علیہ کے پیغام کو ایک تسلسل سے دکھی انسانیت تک پہنچائیں۔

یاد رکھیں!

قلندر پاک ؒ سے محبت کا واحد اور مضبوط راستہ صرف اور صرف اُن کے پیغام کو بے غرض ہو کر دکھی انسانیت تک پہنچانا ہے۔

(پیدائش قلندر پاک بابا بخاریؒ )

قلندر پاک ؒ المعروف کاکیاں والی سرکارؒ کا اصل نام سیّد صفدر حسین بخاری ہے۔ آپ ؒ 6 مئی 1940 بمطابق۲۸ ربیع الاول ۱۳۵۹ ہجری (بروز پیر) ڈُھڈی تھل ، تحصیل پنڈدادن خان، ضلع جہلم کے ایک متمول سیّد گھرانے میں پیدا ہوئے۔ آپؒ بخاری سادات سے ہیں اور سلسلہ نسب کئی واسطوں سے حضرت مخدوم جلال الدین جہاں گشت سہروردی المعروف مخدوم جہانیاں ؒ سے جا ملتا ہے۔آپؒ اپنے والدین کے اکلوتے بیٹے تھے اور انہوں نے آپؒ کی پرورش نہایت توجہ اور محبت سے کی۔ ابتدائی تعلیم اپنے گاؤں کے ایک سکول سے حاصل کرنے کے بعدگارڈن کالج راولپنڈی سے فارغ التحصیل ہوئے۔آپؒ کے والد بزرگوار سیّد گلزار حسین بخاری مرحوم ایک درویش صفت انسان تھے اور انہوں نے اپنی زندگی کا بڑا حصہ مشہور بزرگ حضرت سیّد شیر علی شاہ قلندرؒ کی ارادت میں گزارا، اور انکے پردہ کرنے کے بعدایک طویل عرصہ حضرت قلندرؒ کی بارگاہ واقع قتل گڑھی ضلع قصور میں جاروب کشی کی اور مزار کی دیکھ بھال سے لے کر زائرین کی خدمت میں مصروف عمل رہے۔آپکو اپنے مرشد سے والہانہ عقیدت و محبت تھی جسکا اظہارآپؒ ہمیشہ میرے سے ہونے والی ملاقاتوں میں ضرور کرتے۔ایک دن دورانِ گفتگوشاہ صاحب نے ہمارے بابا جیؒ کی اوائل عمری میں بخار کی شدت اوراسکے تسلسل کے واقع کا ذکر کرتے ہوے فرمایا " میں بیٹے کو بیماری کے عالم میں قلندر پاک سیّد شیر علی شاہ ؒ کی خدمت میں لے گیا تو آپؒ نے فرطِ محبت سے ایک نگاہ ڈالی توبیٹے کا بخار اتر گیا اور نہ صرف میرے بیٹے کو اس عارضے سے نجات ملی بلکہ قلندر محترم شیر علی شاہؒ آپ کو دیکھ کر بے حد مسکرائے"۔ آگے چل کر جب بابا بخاری ؒ مسند ولایت پہ فائز ہوئے تو یہ بات پایہ ثبوت کو پہنچی کہ اولیاء اللہ کی نظر مقدراتِ الہٰی کی امین ہوتی ہے۔

(وصال قلندر پاک بابا بخاریؒ )

قلندر پاکؒ 8 فروری 2005 بروز منگل بمطابق ۲۹ ذوالحجہ ۱۴۲۵ ہجری کو واصلِ بحق ہوئے۔ آج کل مختلف لوگ آپ کے یومِ وصال پر ایک ابہام کا شکار نظر آتے ہیں۔چنانچہ حقیقت سے آگہی وقت کی سب سے اہم ضرورت ہے۔

آخری ایام آپؒ نے میرے گھر پر گزارے اور یہیں پہ پردہ فرمایا ۔

عُرس مبارک


ہر سال۸،۷،6 فروری کو ہی ہوا کرے گا۔ یوم وصال کے حوالے سے غسل کی پہلی تقریب ۲۶سے۲۹ ذوالحج کے درمیان کسی بھی دن منعقد ہوگی جبکہ غسل مبارک کی دوسری تقریب 5 فروری کو ہوا کرے گی اور یوں اب ہر سال غسل مبارک کی تقاریب اور عُرس مبارک انہی مقررکردہ تاریخوں میں منعقد ہوتا ہے، جو آپ یہ چند تصاریر دیکھ کر ان پرُ وقار اور خوبصورت تقاریب کے حسن کا اندازہ لگا سکتے ہیں۔

(تحریر وارث قلندر سید بابا جی)

URS 2019

URS 2018

سید بابا جی، وارث قلندر

یہ آڈیو صوفی قلندر پاک رحمتہ اللہ علیہ کا پوری انساینت کے لیے پیغام ہے جس میں ہر طرح کی ذہنی ، جسمانی اور روحانی الجھنوں اور بیماریوں کا علاج ہے۔ جب ہم انسانیت کی ذکر کرتے ہیں تو ہم سب مذاہب سے بالا تر ہو کر بات کرتے ہیں ۔ اس پیغام کا مقصد کسی طرح سے آپ کے مذاہب کو بدلنا نہیں ہے اور نہ ہی اس پیغام کے ذریعے کوئی آپ کو مذہب کی طرف راغب کر رہا ہے۔ یہ بات بُہت اہم ہے کہ یہ پیغام دنیا کے ہر دکھی انسان تک پہنچے اور اس پیغام کے عوض کچھ نہیں لیا جائے کہ یہ پیغام سب کے لیے مفت ہے۔

یہ پیغام (آڈیو) کائنات کا سب سے بڑا ردھم ہے جسے آنکھیں بند کر کے سننے سے انسان ہر طرح کی بیماری سے نجات پا لیتا ہے۔

ہر کسی کو یہ پیغام سننے کی اجازت ہے ،ہدایات کو مکمل مد نظر رکھتے ہوئے سننا جائے تو اسے زندگی میں صرف ایک بار سننا کافی ہے ۔ اس کے سننے کا طریقہ یوں ہے: اسے سات دن ، تین بار روزانہ ، صبح دوپہر اور شام سونے سے پہلے آنکھیں بند کر کے سنا جاتا ہے، آڈیو مکمل سننے کے بعد آنکھیں کھولیں ، ہاتھ میں آدھا گلا س پانی لیں اور دوبارہ آنکھیں بند کریں ۔ کسی بھی مذہب کو نہ ماننے والے اپنا نام ، باقی مذاہب کے لوگ اپنے اپنے خالق حقیقی کا نام دل میں تین بار پیار سے پڑھیں اور آنکھیں بند رکھتے ہوئے اس پانی کو تین سانسوں میں پی لیں۔ مثال کے طور پر عیسائی مذہب کے لوگ عیٰسی علیہ السلام کا تصور باندھیں گے اور دل میں تین بار (عیٰسی ؑ، عیٰسیؑ، عیٰسیؑ) کہیں اور باقی مذاہب کے لوگ اسی طرح اپنے اپنے مذہب کے مطابق دل میں اپنے خدا کا نام لیں۔

آئیں اس پیغام کے ذریعے انسانیت کو بچائیں اور سسکتے بِلکتے اور تڑپتے لوگوں کے دلوں اور روحوں کو سکون بانٹیں۔

یہ پیغام ، یہ آڈیو ہر اس انسان کے لیے ہے جس تک یہ پہنچ گئی ہے اور اس کا سننے کی کوئی قیمت نہیں ہے۔

اس آڈیو ۔ سنیں اور مہربانی فرما کر اس پیغام کو آگے پھیلائیں

(تحریر وارث قلندر ، سید بابا جی)